بھارت میں ٹرین حادثے میں نو افراد ہلاک ہو گئے۔ 21

بھارت میں ٹرین حادثے میں نو افراد ہلاک ہو گئے۔

تصویر جس میں بھارت کے مغربی بنگال صوبے میں ایک ٹرین پٹری سے اتری جس کے نتیجے میں کم از کم نو افراد ہلاک ہوئے، جبکہ 36 دیگر افراد جمعہ، 14 جنوری 2022 کو زخمی ہوئے۔
  • حکام نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ مرنے والوں کی تعداد میں مزید اضافہ ہو سکتا ہے کیونکہ کم از کم 36 مسافر زخمی ہوئے ہیں۔
  • زخمیوں کو طبی امداد کے لیے اسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔
  • بھارتی حکومت نے مرنے والوں کے لواحقین کے لیے معاوضے کا اعلان کر دیا۔

جلپائیگوری، مغربی بنگال: بھارتی ریاست مغربی بنگال میں جمعہ کو ایک مسافر ٹرین پٹری سے اترنے کے نتیجے میں کم از کم نو افراد ہلاک اور 36 سے زائد زخمی ہوگئے۔

انڈیا کی ایشین نیوز انٹرنیشنل (اے این آئی) خبر رساں ایجنسی کے مطابق بیکانیر-گوہاٹی ایکسپریس آسام سے راجستھان جا رہی تھی کہ جلپائی گوڑی میں حادثہ پیش آیا۔

حادثے کی اطلاع ملتے ہی مقامی انتظامیہ اور امدادی کارکن جائے حادثہ پر پہنچ گئے اور زخمیوں کو قریبی اسپتال منتقل کرنا شروع کردیا جہاں انہیں طبی امداد فراہم کی گئی۔

بھارتی ریلوے کے ترجمان کی جانب سے جاری بیان کے مطابق ٹرین کی تین بوگیاں پٹری سے اتر گئیں اور اب تک نو ہلاکتوں کی تصدیق ہو چکی ہے جب کہ ہلاکتوں میں مزید اضافہ ہو سکتا ہے۔

ریسکیو حکام نے ٹرین کی بوگیوں کو ہٹانے کے بعد ٹریک کو کلیئر کر دیا تھا اور حادثے کے باعث ٹرین سروس بھی معطل ہو گئی تھی۔

دوسری جانب ملک کی وزارت ریلوے نے تحقیقات کا آغاز کردیا ہے جب کہ حکومت نے جاں بحق افراد کے لواحقین کے لیے مالی معاوضے کا اعلان کیا ہے۔

اے این آئی کے مطابق، ہندوستان کے وزیر ریلوے اشونی وشناو ڈوموہانی، جلپائی گوڑی کے قریب ٹرین حادثے کی جگہ پر پہنچے اور کہا: “قانونی انکوائری شروع کر دی گئی ہے۔ وزیر اعظم مودی صورتحال پر نظر رکھے ہوئے ہیں اور میں ان کے ساتھ مسلسل رابطے میں ہوں۔ میری خواہش ہے کہ جلد صحت یابی ہو زخمی.”

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں